peperonity.net
Welcome, guest. You are not logged in.
Log in or join for free!
 
Stay logged in
Forgot login details?

Login
Stay logged in

For free!
Get started!

Guestbook


kohinoor heera - Newest pictures
a--------dilchasp.malomaat.peperonity.net

♥☞ کوہ نور ☜♥

☆ کوہ نور ہیرے کی دلچسپ اور حیرت انگیز کہانی ☆


کوہ نور ہیرے کے سفر کی دلچسپ اور حیرت انگیز کہانی

یہ ہیرا دنیا کا مہنگا ترین اور تاریخی ہیرا ہے۔یہ ہیرا مردوں کے لیے نحوست اور موت کی علامت بنا رہا، جب کہ عورتوں کے لیے خوش بختی کا سبب۔کوہِ نور کو دنیا کا مشہور ترین، قیمتی اور اپنی نوعیت کا سب سے بڑا ہیرا تسلیم کیا جاتا ہے۔ یہ ہیرا چار ہزار سال قبل انڈیا میں دریافت ہوا تھا۔ اس کے بعد یہ ہیرا مختلف بادشاہوں، راجاؤں اور حاکموں سے ہوتا ہوا آج کل انگلینڈ کی ملکہ الزبتھ کے تاج میں جلوہ افروز ہے۔ انگلینڈ والوں نے اس ہیرے کو بہتر شکل میں لانے اور اس کی چمک دمک میں اضافہ کرنے کے لیے تراش کر کچھ مختصر کردیا ہے۔ اب اس کی موجودہ صورت 105قیراط اور وزن 21گرام ہے جب کہ اس کا اصل وزن 37 گرام تھا۔ بہرحال اس میں کوئی شبہ نہیں کہ وہ دنیا کا قیمتی ترین ہیرا ہے۔

دیگر ہیروں کی طرح کوہِ نور کے ساتھ بھی کئی روایات اور کہانیاں وابستہ ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ یہ ہیرا مردوں کے لیے نحوست اور موت کی علامت بنا رہا ہے جب کہ عورتوں کے لیے خوش بختی کا سبب بنا ہے۔

کوہِ نور ہیرا انڈیا کے مختلف ہندو اور مسلمان حکم رانوں سے ہوتا ہوا 1526 میں مغل بادشاہ بابر کے ہاتھ اس وقت آیا جب اس نے ابراہیم لودھی کو شکست دے کر دہلی پر قبضہ کرلیا تھا۔ بابر کی یادداشتوں پر مشتمل کتاب ’’بابر نامہ‘‘ میں بھی اس ہیرے کا ذکر ہے۔ مذکورہ کتاب میں بابر نے کوہِ نور ہیرے کے بارے میں لکھا ہے: ’’یہ اس قدر قیمتی ہیرا ہے کہ اس کے عوض ملنے والی رقم سے دنیا بھر کے تمام لوگوں کو دو دن کا کھانا کھلایا جاسکتا ہے۔‘‘ بابر کے بعد یہ ہیرا ہمایوں کے پاس پہنچا۔ اکبر نے اسے اپنے پاس نہیں رکھا۔ اس کے بعد اکبر کے پوتے شاہ جہاں نے اسے خزانے کی تجوری سے نکلوا کر اپنے پاس رکھا لیا تھا۔ اس نے بعد میں اس ہیرے کو تخت طائوس کی زینت بنا دیا۔ شاہ جہاں کے بعد اس کا بیٹا اورنگ زیب عالمگیر بادشاہ بنا ۔ اس نے اپنے باپ شاہ جہاں کو آگرہ میں قید کیا تھا اور کہا جاتا ہے کہ اورنگ زیب نے شاہ جہاں کے قید خانے کی کھڑکی پر کوہ نور ہیرے کو اس زاویے سے رکھوا دیا تھا کہ تاج محل کا عکس اس میں نظر آسکتا تھا۔

لطف کی بات یہ ہے کہ اس ہیرے کو ’’کوہِ نور‘‘ کا نام نادر شاہ نے دیا تھا۔ اس کے بعد آج تک اسے کوہِ نور ...


This page:




Help/FAQ | Terms | Imprint
Home People Pictures Videos Sites Blogs Chat
Top
.