peperonity.net
Welcome, guest. You are not logged in.
Log in or join for free!
 
Stay logged in
Forgot login details?

Login
Stay logged in

For free!
Get started!

Guestbook


tooti khidki - Newest pictures
a--------urdu.duniya.in.peperonity.net

『 ٹوٹی کھڑکی 』

سماجیات

آج پُررونق اور روشنیوں کے شہر نیویارک کے حالات 1980ء کی دہائی سے بالکل مختلف ہیں ۔ ان دنوں طاقتور امریکا کا یہ اہم ترین شہر جرائم کا گڑھ بن چکا تھا۔ سرشام نیویارک کی سڑکیں سنسان ہوجاتیں۔ لوگ سب وے میں سفر کرنے سے خوف کھاتے۔کئی علاقے ’’نو گوایریاز ‘‘بن چکے تھے۔ ایک سال میں چھے لاکھ سنگین جرائم اور دوہزار سے زائد قتل کی وارداتیں ریکارڈ کی گئیں۔

عام حالات میں چالیس میل فی گھنٹا کی رفتار سے چلنے والی ٹرین پندرہ میل فی گھنٹا بھی نہ چل پاتی کیونکہ تقریبا پانچ سو سے زائد مقامات پرپٹڑی کو نقصان پہنچایا گیا تھا ۔ٹرین پر مفت سفر کرنا عام بات تھی جس کی وجہ سے ہر سال ادارے کو ایک سو پچاس ملین ڈالر کا نقصان ہوتا۔ گن پوائنٹ پر دکانیں‘ گیس اسٹیشن اور لوگوں کو لوٹا جاتا اور مزاحمت کرنے والے کو قتل کر دیا جاتا تھا۔

یہ 22 دسمبر 1984ء کا ذکر ہے۔ کرسمس سے چند روز قبل جینزاور جیکٹ میں ملبوس 37سالہ برن ہارڈ مین ہیٹن کی 14ویں اسٹریٹ کے7th ایوینیو کے سب وے سے ایکسپریس ٹرین کے ایک ڈبے میں سوار ہوا اور ایک کونے میں چار سیاہ فام نوجوانوں کے ساتھ بیٹھ گیا۔ ڈبے میں قریباً بیس مسافر سمٹ کر ایک کونے میں بیٹھے تھے کیونکہ وہ اِن چار سیاہ فاموں کی حرکتوں سے خوف زدہ تھے۔

’’تم کیسے ہو؟ ‘‘ اِن چاروں میں سے ایک نے جس کا نام ٹونی تھا ‘ برن ہارڈ سے پوچھا۔ ایک اور کالے، ہیری نے آگے بڑھ کر برن ہارڈ سے پانچ ڈالر طلب کیے۔ تیسرے نوجوان، جیمز نے برن ہارڈ کی توجہ اپنی جیب میں موجود پسٹل کی طرف دلائی۔
صورت حال پریشان کن تھی مگر برن ہارڈ نے قدرے تحمل اور دلیری سے پوچھا’’: تم کیا چاہتے ہو؟‘‘

’’پانچ ڈالر دے دو۔‘‘ٹونی نے اپنا مطالبہ دہرایا۔ برن ہارڈ نے اس کی طرف دیکھا۔ ٹونی کی آنکھیں چمک رہی تھیںاور وہ صورت حال سے لطف اُٹھا رہا تھا جبکہ چہرے پر بڑی سفاکانہ مسکراہٹ تھی۔ اُس کی آنکھوں کی چمک اور مکروہ مسکراہٹ نے برن ہارڈ کو بھڑکا دیا۔ پلک جھپکتے ہی اُس نے جیب سے کروم پلیٹیڈ ریوالور نکالا اور اعشاریہ 35 کی گولیاں اُن چاروں کے جسموں میں اتاردیں۔ موقع ہی پر چاروں ڈھیر ہو گئے مگر اُن میں سے ایک ڈیرل نامی سیاہ فام چیخ پکار کررہا تھا۔

برن اُس کی طرف متوجہ ہوا ’’تم تو ابھی تک زندہ ہو، یہ لو ایک اور۔‘‘ اور پانچویںگولی ڈیرل کی ریڑھ کی ہڈی میں ...


This page:




Help/FAQ | Terms | Imprint
Home People Pictures Videos Sites Blogs Chat
Top
.